جمعہ , مئی 17 2019
تازہ ترین
Home / اہم خبریں / امام الحق نے وہ ریکارڈ بنا ڈالا جو کوہلی اور ڈیویلیئرز کے پاس بھی نہیں

امام الحق نے وہ ریکارڈ بنا ڈالا جو کوہلی اور ڈیویلیئرز کے پاس بھی نہیں

اوپنر و ن ڈے کرکٹ میں تیز ترین 6سنچریاں سکور کرنے والے بلے باز بن گئے

لاہور(نیوزنائن تازہ ترین اخبار۔15مئی 2019ء) قومی ٹیم کے اوپنر امام الحق و ن ڈےکرکٹ میں تیز ترین 6سنچریاں سکور کرنے والے بلے باز بن گئے ہیں ۔ 23سالہ امام الحق نے انگلینڈ کے خلاف تیسر ے ون ڈے میں151رنز کی باری کھیلی ،یہ ان کے ون ڈے کیریئر کی چھٹی سنچری تھی جو انہوں نے محض27اننگز کھیل کر بنائی جس کے ساتھ ہی انہوں نے کم ترین اننگز میں6ون ڈے سنچریاں بنانے کا عالمی ریکارڈ بھی اپنے نام کرلیا ،ان سے قبل یہ ریکارڈ سری لنکا کے اپل تھرنگا کے پاس تھا جنہوں نے 29اننگز کھیل کر یہ کارنامہ سر انجا م دیا تھا ، پاکستان کے بابر اعظم نے 32اننگز کھیل کر یہ ریکارڈ بنایا تھا ، جنوبی افریقہکے ہاشم آملا نے 34اننگز کھیل کر اپنی چھ سنچریاں سکور کی تھیں جبکہ پروٹیز وکٹ کیپر بلے باز کوئنٹن ڈی کوک نے 35اننگز کھیل کر یہ کارنامہ سر انجا م دیا تھا ،امام الحق اب تک27ون ڈے میچز کی 27اننگز میں4مرتبہ ناٹ آﺅٹ رہتے ہوئے60.04کی اوسط سے1381رنز سکورکرچکے ہیں جن میں6سنچریاں اور5نصف سنچریا ں شامل ہیں،انہوں نے یہ رنز82.20کے سٹرائیک ریٹ سے بنائے ہیں۔

یاد رہے کہ تیسرے ون ڈے میں انگلینڈ نے پاکستان کو 6 وکٹوں سے شکست دے کر سیریز میں دو،صفر کی برتری حاصل کرلی۔برسٹل میں کھیلے گئے میچ میںپاکستان کے 359 رنز کے بڑے ہدف کو انگلش بلے بازوں نے اپنی عمدہ بیٹنگ کی بدولت 4 وکٹوں پر حاصل کرلیا، جیسن روئے اور بیرسٹو پر مشتمل جوڑی نے ٹیم کو اچھا آغاز فراہم کرتے ہوئے 159 کی قیمتی پارٹنرشپ قائم کی، روئے 76 اور بیرسٹو 128 رنز بنا کر پویلین لوٹے۔جو روٹ 43،بین سٹوکس 37 رنز بنا کر آﺅٹ ہوئے جب کہ کپتان 17 اور معین علی 43 رنز کےساتھ ناقبل شکست رہے۔گرین شرٹس کی جانب سے ایک بار پھر بولنگ لائن مکمل طور پر ناکام رہی اور کوئی بھی بولر متاثر کن کارکردگی پیش نہ کرسکا، جنید خان، عماد وسیم اور فہیم اشرف نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔اس سے قبل انگلینڈ نے ٹاس جیت کر پاکستان کو بیٹنگ کی دعوت دی تو قومی ٹیم کا آغاز ایک بار پھر اچھا نہ رہا اور اوپننگ جوڑی صرف 7 رنز پر ٹوٹ گئی، پچھلے میچ میں سنچری بنانےوالے فخر زمان اس بار فیل ہوگئے اور صرف 2 رنز پر چلتے بنے جبکہ بابر اعظم بھی لمبی اننگز نہ کھیل سکے اور 15 رنز پر بولڈ ہوگئے۔27 رنز پر وکٹیں گرنے کے بعد حارث سہیل اور امام الحق نے ذمہ دارانہ بیٹنگ کرتے ہوئے 68 رنز کی شراکت داری قائم کی تاہم حارث سہیل 95 کے مجموعے پر رن آﺅٹ ہوگئے، انہوں نے 41 رنز بنائے۔کپتان سرفراز احمد نے اوپنر امام الحق کےساتھ ملکر 65 رنز جوڑے اور 27 رنز پر پویلین لوٹ گئے جب کہ امام الحق نے 97 گیندوں پر سنچری مکمل کی ، وہ 151 رنز بنا کر آﺅٹ ہوئے، ان کی اننگز میں 16 چوکے اور ایک چھکا شامل تھا۔آصف علی نے جارحانہ بیٹنگ کرتے ہوئے 43 گیندوں پر 52 رنز بنائے جس میں 3 زبردست چھکے اور 2 چوکے شامل تھے۔قومی ٹیم نے مقررہ اوورز میں 9 وکٹوں کے نقصان پر 359 رنز بنائے، عماد وسیم 22،فہیم اشرف 13اور شاہیں آفریدی 7 رنز پر پویلین لوٹے جبکہ حسن علی 18 اور جنید خان صفر پر ناٹ آﺅٹ رہے۔انگلینڈ کی جانب سے کرس ووکس نے سب سے زیادہ 4 وکٹیں حاصل کیں،کرن نے 2، پلنکٹ اور ڈیوڈ ویلی نے 1 ،1وکٹ حاصل کی۔

About نیوز 9

Check Also

معروف کمپنی پےپال نے پاکستان آںے سے انکار کر دیا

ے پال نے آنے سے انکار اس لیے نہیں کیا کہ اسے پاکستان میں کام …

جواب دیں