جمعہ , مئی 17 2019
تازہ ترین
Home / اہم خبریں / ڈالر بے قابو ، روپے کی بے قدری جاری

ڈالر بے قابو ، روپے کی بے قدری جاری

اوپن مارکیٹ میں ڈالر 150 روپے اور انٹربینک مارکیٹ میں 149 پر فروخت ہونے لگا

کراچی (نیوزنائن تازہ ترین ۔ 17 مئی 2019ء) : ڈالر ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا ہے ۔ تفصیلات کے مطابق ڈالر اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت میں تین روپے کا اضافہ ہوا جس کے بعد ڈالر 147 سے 150 کی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا ہے۔ دو روز میں اوپن مارکیٹ میں ڈالر چھ روپے مہنگا ہو چکا ہے۔ اوپن مارکیٹ میں 150 روپے جبکہ انٹربینک مارکیٹ 149 روپے پر فروخت ہو رہا ہے۔شئیر بازار میں بھی شدید مندی دیکھنے میں آئی،سرمایہ کاروں کے 150 ارب روپے ڈوب گئے۔ کاروبار کے دوران 100 انڈیکس میں 965 پوائنٹس کی کمی بھی ہوئی۔ جس کے تحت انڈیکس تین سال چار ماہ کی کم ترین سطح پر آگیا ہے۔ ڈالر کی مسلسل بڑھتی ہوئی قیمت اور روپے کی بے قدری پر معاشی ماہرین نے بھی تشویش کا اظہار کردیا ہے۔ خیال رہے کہ آج صبح انٹربینک مارکیٹ میں ڈالر کی قدر میں ایک روپیہ 48 پیسے کا اضافہ ہوا جس کے بعد ڈالر کی نئی قیمت 148 روپے ہو گئی۔

کاروباری دن کے آغاز پر ڈالر 148 روپے فروخت ہوتا رہا۔ تاہم اب اوپن مارکیٹ میں ڈالر150 روپے کی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا ہے جبکہ انٹربینک مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت 149 روپے ہو گئی ہے۔ یاد رہے کہ گذشتہ روز کاروباری لین دین کے آغاز پر انٹربینک مارکیٹ میں ڈالر کی قدر میں 5.61 روپے کا اضافہ ہوا تھا۔انٹر بینک میں ڈالرکی قیمت 5 روپے 60 پیسے اور اوپن مارکیٹ میں 3 روپے بڑھ گئی اور دونوں ریٹ 147 روپے پر جا پہنچے۔انٹر بینک مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت خرید 146 اور قیمت فروخت 147 روپے دیکھی گئی تھی۔ڈالر کی قدر میں اضافے کے بعد غیرملکی قرضوں کی سینچری مکمل ہو چکی ہے۔ جس کے تحت ملک کے بیرونی قرضے 106 ارب ڈالر تک پہنچ چکے ہیں۔ معاشی ماہرین کا کہنا ہے کہ ڈالر کی قیمت بڑھنے سے پٹرول کی قیمت میں بھی اضافہ ہونے کا قوی امکان ہے اور اگر پٹرول کی قیمت بڑھی تو ملک میں مہنگائی کا ایک نیا طوفان آئے گا جس میں ملک کی غریب عوام مزید پس جائے گی۔

About نیوز 9

Check Also

شاداب خان نے ڈینٹسٹ کے اوزاروں سے وائرس کا شکار ہونے کی اطلاعات غلط قرار دیدیا

کسی ڈاکٹر کے پاس گیا ہی نہیں ، معلوم نہیں وائرس کا شکار کہاں اور …

جواب دیں